شمالی وزیرستان کے کامران احمد کا پاکستان کے لیے ایک بڑا معرکہ

کامران خان کا تعلق شمالی وزیرستان کی تحصیل سپین وام سے ہے۔

کامران خان نے امریکہ میں منعقدہ ایم ایس آئی کے تخلیق کار ایوارڈ 2023 میں پیپلز چوائس ایوارڈ جیت کر پاکستان اور بالخصوص شمالی وزیرستان کے لوگوں کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے۔

عالمی مقابلہ جیتنے پر کامران کو پاک فوج کی طرف سے بہت سراہا گیا اور اس کے اعزاز کے لیے میران شاہ ڈویژن ہیڈکواٹر مدعو کیا گیا۔

ٹو ڈی انیمیشن ٹیکنالوجی کی عدم دستیابی کے باعث کامران کو اپنے ہنر کو نکھارنے میں مشکلات درپیش تھی۔

پاک فوج نے کامران کے صلاحیتوں کو نکھارنے کے لیے ان کو جدید ٹکنالوجی سے لیس لیپ ٹاپ مہیا کیا جو جدید گرافک کارڈز اور انیمیشن کے لیے مختلف سافٹ وٸرز سے لیس ہے جو کہ ان کی ہنر کو نکھارنے میں مزید مدد فراہم کرےگا اور مستقبل میں ان کے لیے مزید مواقع فراہم کرنے میں مدد گار ثابت ہوگا۔

کامران خان نے یادگار شہدا پہ کھڑے ہو کر اپنی کامیابی شہداء کے نام کی اور کہا کہ شہداء کی بدولت ہی شمالی وزیرستان میں امن قائم ہوا ہے۔

کامران نے کہا جو لوگ کہتے ہیں شمالی وزیرستان میں امن نہیں ہے میں نے امن کی بدولت یہ ہنر سیکھا اور عالمی مقابلے میں حصہ لیا۔

اس عالمی مقابلے میں حصہ لینے کی بدولت کامران کے ہنر میں اور نکھار آیا ہے اور اس کی حوصلہ افزاٸی ہوٸی ہے اور کامران نے لوگوں کو بھی محنت کرنے اور آگے بڑھنے کی ہدایت کی ہے۔

کامران خان شمالی وزیرستان کے لوگوں کے لیے ایک مثال ہے اور روشن مستقبل کی ضمانت ہے۔

Visited 1 times, 1 visit(s) today

You might be interested in