آشایا نے چپس کے پیکٹ سے چشمہ تیار کرلیا،سوشل میڈیا پر چرچے

پونے(این این آئی)بھارتی شہرپونے میں ایک اسٹارٹ اپ کمپنی نےایسی چیز ایجاد کردی جسے پورےدنیا میں سراہا جا رہا ہے،اسٹارٹ اپ کمپنی آشایا نے چپس کے پھینکے گئے ریپرزسے تیارکردہ دنیا کا پہلا ری سائیکل شدہ چشمہ تیار کیا ہے۔ کمپنی کے بانی انیش مالپانی نے ٹوئٹرپرٹرینڈی ری سائیکلڈ سن گلاسز سے متعلق صارفین کو بتایا۔ انہوں را مٹیریل سے لے کر چشمہ بننے تک کا سارا عمل ویڈیو کی صورت میں شیئر میں پیش کر دیا جس میں ملٹی لیئرڈ پلاسٹک (ایم ایل پی)سے چشمے بنانے کے پیچھے پوراعمل کیا ہے۔انیش کے مطابق ان کی کمپنی میں نہ صرف چپس بلکہ ہر قسم کی چیزیں ری سائیکل کی جاتی ہیں جن میں چاکلیٹ کے ریپر، دودھ کے ڈبے اور بقیہ اہم پیکٹ شامل ہیں۔انہوں نے بتایا کہ کئی تہوں والا پلاسٹک ری سائیکل کرنا ناممکن سمجھا جاتا ہے، اسی لیے دنیا بھرمیں اسے ری سائیکل کرنے کی شرح صفر ہے، لیکن ہماری کمپنی نے پلاسٹک ری سائیکل کرکےکئی جھلیوں سے مواد نکالنے کا طریقہ نکال لیا ہے، جس ہائی کوالٹی مٹیریل میں تبدیل کر کے چشمے بنائے جاتے ہیں۔برانڈ وِداٹ گلاسزسے متعلق انیش نے مزید بتایا کہ یہ سب سے پائیدار چشمے ہوں گے۔ سورج کی شعاعوں کو جذب کرنے کے باعث یہ بہت کارآمد، پائیداراورلچکدار ہیں اور آرام دہ ہیں۔

About The Author

You might be interested in

Post A Comment For The Creator: vicharkisoch

Your email address will not be published. Required fields are marked *