سعودی عرب: دنیا کی سب سے زیادہ منافع بخش کمپنی اب آرامکو ہے

سعودی عرب کی تیل کمپنی آرامکو تیل کی قیمتوں میں اضافے کے باعث مالی سال 2022-23 میں ریکارڈ منافع ہوا ہے جس کے بعد یہ دنیا کی سب سے بڑی منافع بخش کمپنی بن گئی۔
تفصیلات کے مطابق سعودی آرامکو گزشتہ 12 ماہ میں دنیا کی سب سے زیادہ منافع حاصل کرنے والی کمپنی بن گئی ہے
فوربز کی جاری کردہ تازہ رپورٹ کے مطابق سعودی آرامکو ایک بار پھر دنیا کی سب سے زیادہ منافع بخش کمپنی قرار پائی ہے حالانکہ رواں سال کی دوسری سہ ماہی میں سال بہ سال کی بنیاد پراس کے منافع میں 38 فی صد کمی ہوئی ہے۔
غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ 12 ماہ کے مالیاتی اعداد و شمار کے مطابق پانچ مئی 2023 تک سعودی عرب کی ملکیت تیل کمپنی کو 156.36 ارب ڈالر کا منافع ہوا تھا۔
رواں سال کی دوسری سہ ماہی کے دوران میں 30.08 ارب ڈالر کا منافع گذشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 38 فی صد کم تھا۔اس حوالے سے ترجمان آرامکو کا کہنا ہے کہ کہ آمدن میں کمی خام تیل کی کم قیمتوں اور ریفائننگ اور کیمیکل مارجن میں کمی کی وجہ سے ہوئی ہے۔
سعودی آرامکو نے دوسرے نمبر پر امیرترین کمپنی ایپل کے مقابلے میں نمایاں طور پر زیادہ منافع کمایا۔ایپل کا منافع 94.32 ارب ڈالر تھا۔
ایک تخمینے کے مطابق آرامکو کی مارکیٹ قدر 2,055.22 ارب ڈالر ہے اور وہ ایپل اور مائیکروسافٹ سے پیچھے ہے۔فروخت کے معاملے میں آرامکو وال مارٹ کے بعد دوسرے نمبر پر تھی اور ایمیزون سے آگے تھی۔1933ء سے قائم شدہ آرامکو کے صدر دفاتر سعودی عرب کے شہر ظہران میں واقع ہیں۔
فوربز کے مطابق ایگزون، الفابیٹ، انڈسٹریل اینڈ کمرشل بینک آف چائنا، چائنا کنسٹرکشن بینک اور شیل دنیا میں سب سے زیادہ منافع کمانے والی کمپنیوں میں شامل ہیں۔

You might be interested in