عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) پاکستان سے اسٹاف لیول معاہدہ

پاکستان اور آئی ایم ایف کا 3 ارب ڈالرز اسٹینڈ بائی ارینجمنٹ کا معاہدہ ہوا ہے۔

عالمی مالیاتی فنڈ کا کہنا ہے کہ پاکستان کے ساتھ 9 ماہ کا اسٹینڈ بائی معاہدہ طے پایا ہے۔

آئی ایم ایف کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق معاہدہ پاکستان کی بیرونی ادائیگیوں کا دباؤ کم کرے گا، معاہدے سے سماجی شعبے کے لیے فنڈز کی فراہمی بہتر ہو گی۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ معاہدے پاکستان میں ٹیکسز کی آمدن بڑھائے گا، ٹیکس کی آمدن بڑھنے سے عوام کی ترقی کے لیے فنڈنگ بڑھ سکے گی، معاہدہ پاکستان میں مالی نظم و ضبط کا باعث بنے گا۔

آئی ایم ایف نے اعلامیے میں کہا ہے کہ معاہدے سے توانائی کی اصلاحات یقینی بنائی جائیں گی، ایکس چینج ریٹ کو مارکیٹ کے حساب سے مقرر کیا جائے گا، معاہدے سے پاکستان کو بیرونی ممالک اور مالیاتی اداروں سے فنانسنگ دستیاب ہوسکے گی۔

عالمی مالیاتی فنڈ کا کہنا ہے کہ موجودہ معاشی مسائل کو حل کرنے کے لیے پالیسیوں پر سختی سے عمل درآمد ضروری ہے، توانائی کے شعبے میں اصلاحات کی جائیں۔

آئی ایم ایف ایگزیکٹیو بورڈ اسٹاف لیول معاہدے کی منظوری دے گا، ایگزیکٹیو بورڈ کا اجلاس جولائی کے وسط میں ہو گا۔

You might be interested in