ملک میں مزید مہنگائی بڑھنے کا امکان

وزارت خزانہ نے ماہانہ رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں مہنگائی میں اضافے کا امکان ہے۔رپورٹ کے مطابق بنیادی اشیاء کی طلب اور رسد میں فرق کے باعث مہنگائی بڑھ رہی ہے، حالیہ ہفتوں میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے مہنگائی بڑھی۔وزارت خزانہ کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سیلاب کے اثرات کی وجہ سے مہنگائی میں اضافہ ہوسکتا ہے جبکہ مالی سال کے اختتام پر مہنگائی میں کمی کا امکان ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ حکومت آئی ایم ایف پروگرام کو کامیابی سے مکمل کرنے کے لیے پرعزم ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ قابو کر کے زرمبادلہ کے ذخائر پر دباؤ کم کیا جارہا ہے۔وزارت خزانہ کے مطابق جولائی سے فروری تک ترسیلات زر میں 10 فیصد کمی ہوئی، مالی سال کے 8 ماہ میں برآمدات میں9.7 اور درآمدات میں 21 فیصد کمی ہوئی۔رپورٹ کے مطابق مالی سال کے 8 ماہ میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 68 فیصد کم ہوا، غیرملکی سرمایہ کاری میں 40.4 فیصد کمی ہوئی۔وزارت خزانہ کے مطابق 29 مارچ کو اسٹیٹ بینک کے زرمبادلہ کے ذخائر 4 ارب 7 کروڑ 60 لاکھ ڈالرز تھے، 29 مارچ کو ڈالر کا ریٹ 283 روپے 92 پیسے تھا۔رپورٹ کے مطابق 8 ماہ میں ایف بی آر ٹیکس وصولیوں میں 18.2 فیصد اضافہ ہوا، جولائی سے فروری تک بجٹ خسارے میں 4 فیصد اضافہ ہوا۔

You might be interested in