مہنگائی نے عوام کے ہوش اڑا کے رکھ دیے ،اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں مزید اضافہ

مہنگائی نے عوام کے ہوش اڑا کے رکھ دیے ، گزشتہ ایک ماہ کے دوران اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں 102 روپے تک کا اضافہ ہوا، چاول، دالیں ، بیسن کی قیمتوں میں 25سے 75 روپے تک اضافہ،آئل 71سے 102روپے تک بڑھا، درجہ اول آئل کی فی لٹر قیمت 600سے 610روپے تک پہنچ گئی۔تفصیلات کے مطابق اوپن مارکیٹ میں گھی اور آئل کی مختلف قیمتیں وصول کی جارہی ہیں، درجہ اول آئل کی فی لٹر قیمت 600 سے بڑھ کر 610 روپے تک پہنچ گئی ہے، ایک ماہ کے دوران درجہ اول آئل کی قیمت میں 71روپے تک اضافہ دیکھا گیا، جس سے پانچ لٹر کی پیٹی 355 روپے اضافے سے 3050 روپے کی ہو گئی ہے جبکہ درجہ اول گھی کی قیمتوں میں بھی اسی تناسب سے اضافہ دیکھا گیا ہے ۔درجہ دوم آئل کی قیمتوں میں ایک ماہ کے دوران 102 روپے تک اضافہ ہوا، جس سے 12 لٹر کی پیٹی کی قیمت 1238 روپے اضافے سے 6528 روپے تک پہنچ گئی ہے جبکہ درجہ دوم گھی کی قیمت میں 71روپے تک اضافہ کیا گیا ہے جس سے 12 کلو کی پیٹی 1 ہزار132 روپے کے اضافے کے بعد 6 ہزار 432 روپے تک جا پہنچی ہے ۔رواں ماہ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے جاری کردہ سرکاری لسٹ میں دالوں کی قیمتوں میں بھی 75روپے کلو تک اضافہ کیا گیا، ریٹ لسٹ کے مطابق چاول سپر باسمتی 45 روپے اضافے سے 300روپے ،دال چنا باریک 30روپے اضافے سے 235 روپے ،دال چنا سپیشل 35 روپے اضافے سے 250 روپے ،دال مسور موٹی 25روپے اضافے سے 255روپے فی کلو ہو گئی ہے. اسی طرح دال ماش امپورٹڈ دھلی ہوئی 75 روپے اضافے سے 410 روپے ،دال ماش چھلکے والی امپورٹڈ 55 روپے اضافے سے 370، دال مونگ 30 روپے اضافے سے 255، کالا چنا موٹا لوکل 35 روپے اضافے سے 235، کالا چنا باریک لوکل 35روپے اضافے سے 220روپے ،سفید چنا 75روپے اضافے سے 360روپے جبکہ بیسن کی قیمت 40 روپے اضافے سے 255 روپے فی کلو مقرر کی گئی ہے ۔

About The Author

You might be interested in

Post A Comment For The Creator: vicharkisoch

Your email address will not be published. Required fields are marked *