میکڈونلڈز کا ایک ماہ تک کھانا مفت دینے کا اعلان کر دیا

برطانیہ کےدارالحکومت لندن میں ایک شخص کو اس وقت انتہائی عجیب و غریب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب وہ امریکا کے مشہور فاسٹ فوڈ ریسٹورنٹ “میکڈونلڈز” کی برانچ میں پہنچا، جہاں اس نے ایک ایسا کھانا خریدا جس میں “ساسیج” اور آلوؤں کا سینڈوچ ہونا تھا۔ لیکن کھانے کے بجائے اسے اندر سے ایک خوشگوار حیرت محسوس ہوئی۔خوش قسمت آدمی کو پیکٹ کے اندر سے 5,000 ڈالر نقد ملے۔ اس میں کوئی فوڈ آئٹم نہیں تھا مگراندر ڈالر بھرے ہوئے تھے۔یہ رقم تاہم گاہک جوشیا ورگاس کو ملی جو ایک ایماندارانسان ہیں۔ انہوں نے وہ تھیلا اسٹور کو واپس کر دیا جب وہ اس جگہ سے پہنچا اور انہیں رقم دی تو معلوم ہوا کہ کھانا پہنچانے والے ملازم کے دو تھیلوں میں الجھن تھی، جن میں سے ایک میں رقم کی رقم موجود تھی جو برآمد ہوئی تھی۔اس نے واقعے کا ایک ویڈیو کلپ ریکارڈ کیا گیا جو سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا گیا ہے۔ گاہک کا کہنا ہے کہ اسے رقم واپس کرنے یا نہ کرنے کے بارے میں ایک بڑی مخمصے کا سامنا ہے۔اس نے اپنی کار کے اندر سے یہ بھی کہا کہ “میں میکڈونلڈز گیا اور انہوں نے مجھے اس پیکٹ سینڈوچ دیا۔ میں نے اسے کھولا اس میں پیسوں سے بھرے بہت سے شفاف پیکیج نمودار ہوئے۔ اس نے مزید کہا کہ میں حیران رہ گیا۔ اس میں تو ڈالر ہیں۔ وہ ایسا کیوں کر رہے ہیں؟۔ اب مجھے یہ دہرانا پڑے گا کیونکہ میں ایک اچھا انسان ہوں، میرا اندازہ ہے۔”اس نے انکشاف کیا کہ جب وہ اپنی کار پر واپس آیا تو سب اسے گلے لگا رہے تھےاور اس کا شکریہ ادا کر رہے تھے۔ اس کی ایمانداری پر اسے ایک ماہ تکک می ڈونلڈز کا کھانا مفت دینے کا اعلان کیا گیا۔

You might be interested in