23 جنوری کو بجلی بریک ڈاون کیسے ہوا؟وجہ سامنے آ گئی

ملک بھرمیں 23جنوری کو بجلی بلیک آوٹ سے متعلق این ٹی ڈی سی کی رپورٹ سامنے آگئی۔این ٹی ڈی سی نے بلیک آوٹ سے متعلق رپورٹ پاور ڈویژن کو جمع کرادی۔ رپورٹ کے مطابق فریکوئنسی اتار چڑھاؤ کے باعث 500کے وی کی ٹرانسمیشن لائنز پر ٹرپنگ ہوئی۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹرپنگ کی وجہ سے این ٹی ڈی سی اور کے الیکٹرک کا سسٹم بیٹھ گیا۔ سسٹم بیٹھنے سے 11 ہزار 356 میگاواٹ بجلی سسٹم سے آؤٹ ہوئی۔این ٹی ڈی سی کی رپورٹ کے مطابق بریک ڈاون سے پہلے سسٹم کی فریکوئنسی 50میگا ہرٹز تھی۔فریکوئنسی اچانک بڑھ کر 57میگاہزٹ تک پہنچ گئی۔فریکوئنسی اچانک سے بڑھنے سے سسٹم پر لوڈ اور وولٹیج غیر متوازن ہوئی۔رپورٹ مین بتایا گیا ہے کہ بنیادی فالٹ گدو ٹرانسمیشن لائنوں میں آیا۔تربیلا، منگلا اور وارسک سے بحالی کا عمل فوری شروع کیا گیا۔تربیلا، منگلا اور وارسک میں متعدد بار ٹرپنگ ہوئی۔شام پانچ بجے بجلی کیلئے منگلا کا سیکروٹنائز سسٹم کیا گیا۔#PakistanEconomy #Pakistan #Loadsheddng #ElectricityShutDown #ElectricityBreakdown #23rdjanuary

Visited 1 times, 1 visit(s) today

You might be interested in